سیلفی مقابلے کے نام پر مسافروں کو کاک پٹ سیلفی لینے کی اجازت


 ہفتہ ۱۲ آگست ۲۰۱۷    ۲ ماہ پہلے     ۱۹     کراچی   پرنٹ نکالیں

رپورٹ    ویب ڈیسک   :کراچی:سیرین ایئرلائن نے سیلفی مقابلے کے نام پر جہاز مسافروں کو کاک پٹ میں داخلے کی اجازت دے کر ایک انوکھا کارنامہ انجام دیا، ایئر لائن کا یہ اقدام بین الاقوامی قوانین کی سنگین خلاف ورزی ہے۔تفصیلات کے مطابق سیرین ائیر لائن نے کمرشل فائدے کے لئے سول ایوی ایشن قانون کی دھجیاں اڑا دیں۔ایئر لائن انتظامیہ نے مسافروں کو ٹکٹ کا لالچ دے کر کاک پٹ کا دروازہ بھی مسافروں کے لئے کھول دیا اور مسافروں کو سیلفی مقابلے میں شرکت کی دعوت دی گئی۔سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا سول ایوی ایشن قانون کسی ائر لائن کے مسافروں کو کاک پٹ میں جانے کی اجازت دیتا ہے؟ اس حوالے سے ترجمان سول ایوی ایشن کا کہنا ہے کہ سول ایوی ایشن قوانین کے تحت کاک پٹ میں تصویر نہیں کھینچی جا سکتی۔ترجمان نے کہا کہ اگر کسی ائر لائن نے ایسا کیا ہے تو اس کے خلا ف سول ایوی ایشن قانون کے تحت کاروائی کی جا سکتی ہے۔دوسری جانب ترجمان سرین ائرلائن کا مقف ہے کہ انتطامیہ نے کچھ مسافروں کو اجازت کے بعد کاک پٹ میں سیلفی بنانے کی اجازت دی تھی۔ترجمان سرین ائرلائن کا مزید کہنا ہے کہ ائرلائن انتظامیہ اپنی اجازت سے مسافر کو کاک پٹ میں سیلفی بنانے کی اجازت دے سکتی ہے۔