واشنگٹن:چینی اور امریکی صدر کے درمیان شمالی کوریا کے ساتھ لفظی جنگ روکنے پر اتفاق


 ہفتہ ۱۲ آگست ۲۰۱۷    ۶ دن پہلے     ۱۵     واشنگٽن   پرنٹ نکالیں
(فائل فوٹو)

رپورٹ    ویب ڈیسک   :واشنگٹن: شمالی کوریا اور امریکا میں جاری لفظی جنگ کے خاتمے کے لیے چین نے اپنا کردار ادا کرتے ہوئے دونوں ممالک کو شمال مشرقی ایشیائی خطے میں حالات کو مزید کشیدہ ہونے سے بچانے کے لیے لفظی جنگ سے باز رہنے پر زور دیا۔فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق چینی صدر شی جن پنگ اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا۔وائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق دونوں رہنماؤں نے شمالی کوریا کو اشتعال انگیز بیانات دینے سے روکنے پر اتفاق کیا۔چینی وزارت خارجہ کے مطابق چینی صدر نے ڈونلڈ ٹرمپ پر زور دیا کہ شمالی کوریا کے معاملے میں لفظی جنگ کو ترک کر کے اس معاملے کا سیاسی حل نکالنا چاہیے۔خیال رہے کہ شمالی کوریا کی جانب سے امریکی جزیرے گوام پر میزائل حملوں کی دھمکی کے بعد امریکی صدر نے اپنی فوج کو ممکنہ خطرے سے نمٹنے کے لیے ہر وقت تیار رہنے کی ہدایت جاری کر رکھی ہے۔امریکی صدر نے گوام کے گورنر ایڈی کلاوو کو اطمینان سے رہنے کی تلقین کرتے ہوئے یقین دلایا کہ جزیزہ بالکل محفوظ ہے اور امریکا جزیرے کی مدد کے لیے 1000 فیصد پیش پیش ہے جس کے بعد گوام کے گورنر نے بیان دیا کہ امریکی صدر کی یقین دہانی کے بعد وہ اپنے آپ کو پہلے سے بھی زیادہ محفوظ سمجھ رہے ہیں۔