لاہور: کلثوم نواز کے خلاف تمام درخواستیں خارج، کلین چٹ مل گئی


 بدھ ۱۳ ۲۰۱۷    ایک ھفتہ پہلے     ۲۸     لاہور   پرنٹ نکالیں
فائل فوٹو

رپورٹ    ویب ڈیسک   :لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے این اے ایک سو بیس کے ضمنی الیکشن میں کلثوم نواز کے کاغذات منظور ہونے کے خلاف دائر تمام درخواستوں کو خارج کر دیا ہے، آصف کرمانی کا کہنا ہے کہ بیگم کلثوم نواز شریف کے کاغذات نامزدگی اور اثاثوں میں کوئی بے ضابطگی نہیں نکلی۔ تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ نے این اے 120 سے مسلم لیگ (ن) کی امیدوار کلثوم نواز کی کاغذات نامزدگی کی منظوری کے خلاف دائر تمام درخواستیں مسترد کر دیں، کلثوم نواز کی کاغذات نامزدگی کے خلاف پیپلز پارٹی کے امیدوار فیصل میر ودیگر نے لاہور ہائی کورٹ میں درخواستیں دائر کی تھیں جس میں مؤقف اپنایا گیا تھا کہ کلثوم نواز نے کاغذات نامزدگی میں اقامے اور دیگر تفصیلات ظاہر نہیں کیں جب کہ ریٹرننگ افسر نے حقائق کے برعکس ان کے کاغذات نامزدگی منظور کیے۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار اور دیگر کی جانب سے کلثوم نواز کی کاغذات نامزدگی پر اعتراضات کے بعد لاہور ہائیکورٹ نے سماعت کے لیے تین رکنی فل بینچ تشکیل دیا تھا جس میں جسٹس امین الدین خان، جسٹس شاہد جمیل اور جسٹس عباد الرحمان شامل تھے، آج تین رکنی فل بینچ کے دو ججوں نے کلثوم نواز کے خلاف درخواستوں کو مسترد کر دیا۔ لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے فیصلے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم کے معاون خصوصی اور سینیٹرآصف کرمانی کا کہنا تھا کہ بیگم کلثوم نواز شریف کے کاغذات نامزدگی اور اثاثوں میں ایسی کوئی بے ضابطگی نہیں ملی، جس پر بیگم کلثوم نواز کو نااہل کیا جائے، اس سے قبل لاہور ہائی کورٹ نے بیگم کلثوم نوازکی نااہلی کےخلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔ یاد رہے کہ کلثوم نواز ان دنوں علاج کی غرض سے لندن میں موجود ہیں اور ان کی انتخابی مہم ان کی صاحبزادی مریم نواز چلا رہی ہیں۔ واضح رہے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کی نااہلی کے بعد خالی ہونے والی قومی اسمبلی کی نشست این اے 120 پر ضمنی انتخاب 17 ستمبر کو ہو گا جس کے لیے مسلم لیگ (ن) نے کلثوم نواز کو امیدوار نامزد کیا ہے اور تحریک انصاف کی جانب سے یاسمین راشد امیدوار ہیں جب کہ پیپلز پارٹی نے فیصل میر کو میدان میں اتارا ہے۔