حیدرآباد: بلاول بھٹو 16ستمبر کو دادو میں جلسہ عام سے خطاب کرے گا: نثار احمد کھوڑو


 بدھ ۱۳ ۲۰۱۷    ایک ھفتہ پہلے     ۳۹     حيدرآباد   پرنٹ نکالیں
سینیئر صوبائی وزیر خوراک نثار احمد کھوڑو میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے

رپورٹ    اعجاز لغاری   :حیدرآباد: سینیئر صوبائی وزیر خوراک نثار احمد کھوڑو نے کہا ہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی عوامی پارٹی ہے اور ہم نے شہادتیں دیکر ملک میں جمہوریت بحال کرائی ہے آج ہم جمہوری فضاءمیں سانس لے رہے ہیں - ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی پی پی کے رہنما سید علی نوازشاہ کی رہائشگاہ پر میڈیا کے نمائندوں سے باتیں کرتے ہوئے کیا- انہوں نے کہا کہ آئندہ سال انتخابات کا سال ہے اور پی پی پی چیئرمین بلاول بھٹو کی جانب سے عوامی رابطہ مہم جاری ہے اس ضمن میں 16ستمبر کو دادو ضلعی میں جلسہ بھی منعقد کیا جائیگا - انہوں نے بتاےا کہ وہ آج لمس میں ورلڈ فزیو تھراپی ڈے کے حوالے سے پروگرام میں شرکت کے لیے آئے تھے پروگرام میں مجھے بتایا گیا کہ اگر کوئی شخص جسمانی طور پر معذور ہوجائے تو اس کے فزیو تھراپی کرکے صحیح کیا جاسکتا ہے ،مگر کوئی شخص سیاسی طور پر معذور ہوجائے تو اس کا علاج ناممکن ہے آج کل نواز شریف سیاسی معذور ہیں اور ہمارے دوسرے دوست جو کہ امپائر کی انگلی پر یقین رکھتے ہیں یہ بھی آج کل مایوس ہیں - اس ملک کی تاریخ گواہ ہے کہ ون یونٹ بنانے والے بھی سیاسی طور پر معذور ہوگئے اور جو بھی جمہوری رویے کے خلاف جائیگا وہ بھی معذور ہوجائیگا - صوبائی وزیر نے کہا کہ برما کے مسلمانوں کوسندھ میں آباد کرنے کی افواہیں بے بنیاد ہیں جبکہ برما میں مسلمانوں سے ہونے والی ناانصافیوں اور مظالم پر ہم سراپااحتجاج ہیں - انہوں نے کہا کہ پی پی پی نے صوبے میں تعلیم ، زراعت اور انفرااسٹرکچر کے شعبوں کی ترقی کے لیے بہت کام کر رہی ہے - عمران خان کے جلسے کے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ عمران خان نے لاہور سے مایوس ہوکر سندھ کارخ کیا مگر یہاں بھی اسے مایوسی ملے گی کیونکہ کراچی محمود آباد میں پی ٹی آئی نے صرف 5 ہزار ووٹ لیے - ایک سوال پر انہوں نے کہا ایم کیو ایم اب سندھ میں نتقسیم ہوچکی ہے جبکہ شہری علاقوں میں بھی سیاسی تبدیلی آ رہی ہے - انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم سے ماضی میں سیاسی رابطے رہے ہیں مگر اب ان کی تمام تنظیم منتشر ہے - ایک سوال پر انہوں نے کہا ضیا الحق کے دور میں سندھ میں برما کے مسلمانوں کو کراچی میں لایا گیا ،لیکن اس وقت ایسے کسی بھی فیصلے کی پی پی پی مخالف کریگی - ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ مسقبل میں اگر ایم کیو ایم پاکستان - ایم کیو ایم لندن سے علحیدگی اختیار کی تو اس کے ساتھ چلاجاسکتا ہے تعلیمی اداروں میں دہشتگرد تنظیم کے کارکنان کی موجودگی کے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ اس معاملے کو سنجیدگی سے دیکھ رہی ہے اور دہشتگردی کسی بھی صورت میں قابل قبول نہیں ہے - اس موقع پر پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما پاشاقاضی ، فیاض علی شاہ ، آفتاب خانزادہ اور دیگر بھی موجودتھے