واشنگٹن: امریکی صدر کا ایران سے جوہری معاہدہ ختم کرنے کا فیصلہ


 جمعرات ۱۲ آکتوبر‬‮ ۲۰۱۷    ۲ ھفتے پہلے     ۱۸     واشنگٽن   پرنٹ نکالیں
فائل فوٹو

رپورٹ    ویب ڈیسک   :واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا ایران سے جوہری معاہدہ ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے، اعلان کسی بھی وقت متوقع ہے۔ امریکی میڈیا کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران سے جوہری معاہدہ ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا اور ٹرمپ جوہری معاہدہ ختم کرنے کا کسی بھی وقت اعلان کر سکتے ہیں، عالمی برادری نے صدرٹرمپ کے فیصلے پر تشویش کا اظہار کیا ہے، اعلان کے بعد کانگریس ایران پر پابندیاں عائد کرسکتی ہے، کانگریس کے پاس ایران پر پابندیوں کیلئے ۶۰ روز ہونگے۔ وائٹ ہاؤس پریس سکریٹری سارا سینڈرز نے کہا کہ ایران کے بارے میں صدر مجموعی حکمتِ عملی پر مشتمل اپنا فیصلہ کرچکے ہیں، صدر ٹرمپ نے کیا فیصلہ کیا، اس کیلئے انتظار کریں، امریکی ایران سے نمٹنے کیلئے کوئی وسیع پالیسی چاہتے ہیں، ٹرمپ ایران کیساتھ معاہدے یا کسی ایک حصے پر اتفاق رکھنے پر متفق نہیں، ایران عالمی معاملات پر اب بھی غلط انداز اپنائے ہوئے ہیں۔ ایران سے جوہری معاہدے کی توثیق نہ کرنے پر عالمی برداری میں تشویش پائی جارہی ہے۔ برطانوی وزیراعظم تھریسامے نے صدرڈونلڈ ٹرمپ کو فون کرکےایران جوہری معاہدے پراحتیاط سےغور کرنے کے بعد فیصلہ کرنے کا مشورہ دیا اور معاہدے کو علاقائی سلامتی کے لئے انتہائی اہم قرار دیا۔ برطانوی وزیر خارجہ بورس جانسن نے امریکی ہم منصب ریکس ٹلرسن کوفون کیا اوردنیا کو محفوظ بنانے کی ضرورت پرزور دیا۔ رکن کانگریس الیوٹ کا کہنا ہے کہ امریکا کو ایران جوہری معاہدے کی پاسداری کرنی چاہیے، جبکہ چیئرمین امور خارجہ کمیٹی ایڈ روئس نے کہا کہ معاہدے کو بہتر کرنے کیلئے اتحادیوں سے ملکر کام کیا جائے، بین الاقوامی معائنہ کاروں کو ایرانی جوہری تنصیبات تک رسائی حاصل ہے۔