راولپنڈی: پاکستان کی سرحدوں کے اندر کسی بھی قسم کے مشترکہ آپریشن کی گنجائش موجود نہیں: میجر جنر ل آصف غفور


 جمعرات ۱۲ آکتوبر‬‮ ۲۰۱۷    ۲ ھفتے پہلے     ۲۳     راولپنڈی   پرنٹ نکالیں
(فائل فوٹو)

رپورٹ    ویب ڈیسک   :راولپنڈی: پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ(آئی ایس پی آر) کے سربراہ میجر جنر ل آصف غفور نے کہا ہے کہ طالبان نے 2012ءمیں کینیڈین صحافی اور اس کی اہلیہ کو افغانستان سے اغوا کیا تھا ، اس دوران وہ افغانستان ہی میں رہے جبکہ گذشتہ روز شام 4بجے امریکی حکام کی جانب سے ہمیں بتا یا گیا کہ طالبان انہیں پاکستان منتقل کر رہے ہیں، شام 7بجے پاک فوج کے جوانوں نے گاڑی کو جدید ٹیکنالوجی اور دیگر ذرائع کی مدد سے ٹریس کیا اور گاڑی میں موجود مغوی خاندان کو بازیاب کرالیا، پاکستان کی سرحدوں میں مشترکہ آپریشن کی کوئی گنجائش نہیں تاہم امریکی حکام کی جانب سے بروقت خفیہ اطلاعات دونوں ملکوں کے درمیان تعاون کو بہتر بنا سکتی ہیں۔نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ پاکستان کی سرحدوں کے اندر کسی بھی قسم کے مشترکہ آپریشن کی گنجائش موجود نہیں ، ہماری فوج میں تمام صلاحیت موجودہے اور ہمیں کسی کی مدد کی کوئی ضرورت نہیں ، اگرانٹیلی جنس شیئرنگ ہوگی تودہشت گردی کاخاتمہ ہوگا۔ دنیا کے تمام ممالک نے دہشت گردی کے سامنے گھٹنے ٹیک دئیے تھے مگر پاکستان نے اپنے حصے کا کام مکمل کرتے ہوئے اپنے ملک کو مخفوظ بنا دیا ہے، پاکستان نے اپنے ملک میں جوکرناتھاکرلیا اور اب دنیا کو ڈو مور کرنا ہے۔ پاک فوج نے کینیڈین شہری ، اسکی امریکن بیوی اور بچوں کو کامیاب آپریشن کے بعد بازیاب کرایا ہے جبکہ آج کے آپریشن کا امریکیوں نے بھی اعتراف کیا ہے۔