ڈیرہ اسماعیل خان: مصیبت کے وقت میں پاکستان نے افغانیوں کیلئے اپنے دروازے کھولے، ضیاء الرحمان


 پير ۲۰ مارچ ۲۰۱۷    ۲ ماہ پہلے     ۲۹     ڈیرہ اسما عیل خان   پرنٹ نکالیں
کمشنر افغان مہاجرین ضیاء الرحمان گورنمنٹ پرائمری سکول نیو کوٹلہ سیدان میں افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے

رپورٹ    ظفر عباس   :ڈیر ہ اسماعیل خان: کمشنر افغان مہاجرین انجینئر ضیاء الرحمان نے کہا ہے کہ یو این ایچ سی آر کے تعاون افغان مہاجرین اور مقامی آبادیو ں کو سہولتیں فراہم کرنے کیلئے چار ارب روپے کے منصوبے مکمل ہوچکے ہیں ان منصوبوں میں تعلیم ، صحت کے شعبوں میں زیادہ رقم خرچ ہوئی ہے اس کیلئے ہم یو این ایچ سی آر اور حکومت پاکستان کے مشکور ہیں وہ گورنمنٹ پرائمری سکول نیو کوٹلہ سیدان میں اضافی کمروں کی تعمیر اور سامان کی فراہمی کی افتتاحی تقریب سے خطاب کر رہے تھے اس موقع پر سینئر آپریشن کوآرڈینیٹر یو این ایچ سی آر میرین دن ، چیف کوآرڈینیٹر ایف آر ڈی عظمت خا ن ، وقار معروف ڈی جی آپریشن افغان مہاجرین، جے یو آئی کے ضلعی جنرل سیکرٹری احمد خان کامرانی بھی موجود تھے قبل ازیں انجینئر ضیا ء الرحمان اور یو این ایچ سی آر کے نمائند ے میرین ، نے گورنمنٹ پرائمری سکول حنیف آبا د ، گورنمنٹ گر لز ہائی سکول رتہ کلاچی میں اضافی کمروں کی تعمیر مکمل ہونے پر اور کمپیوٹرلیب کا افتتاح کیا جو کہ یو این ایچ سی آر اور افغان کمشنریٹ کے تعاون سے مکمل ہوا ، بی ایچ یوظفر آباد کالونی میں شعبہ گائنی میں یو این ایچ سی آر اور افغان کمشنر یٹ کے تعاون سے تعمیر ہونیوالے لیبر رومز اور بی ایچ او کو فراہم کئے جانے والی جدید الٹرا ساؤنڈ مشین کا بھی افغان کمشنر اور یو این ایچ سی آر کے نمائند ے نے افتتا ح کیا انجینئر ضیاء الرحمان نے کہا کہ ڈی آئی خا ن اور ٹانک میں افغان مہا جرین اور مقامی آباد ی کیلئے گیارہ کروڑ روپے کی لا گت سے تعلیم صحت اور آبپاشی کے منصو بے مکمل ہو چکے ہیں جبکہ آٹھ کروڑ روپے کی لاگت سے ڈی آئی خا ن میں جلد آبنوشی کے منصو بے شروع کئے جائیں گیانہوں نے کہا کہ مجھے چارج لئے گیارہ ماہ ہو ئے ہیں اللہ تعالیٰ نے مجھے توفیق دی ہے کہ میں نے خیبر پختونخواہ کی عوام کو تعلیم صحت اور آبنوشی و دیگر زندگی کی بنیادی سہولیات فراہم کر نے والے شعبوں میں اربوں روپے کا کام کیا پاکستا ن اور افغانستان کی طویل باؤنڈری لائن ہے ہماری روایات مشتر کہ ہیں زبان بھی مشتر ک ہے مذہب بھی مشترک ہے سینتیس سال قبل مصیبت کے وقت پاکستا ن نے افغانیوں کیلئے اپنے دروازے کھو لے اور اٹھائیس لاکھ سے زائد افغان مہاجرین کو پاکستان میں پناہ دی جو کہ دنیا میں ایک مثال ہے تقر یب سے خطا ب کرتے ہوئے سینئر آپریشن کوآرڈینیٹر میرین دن نے کہا کہ کسی بھی ملک کا روشن مستقبل تعلیم کے ساتھ وابسطہ ہے تعلیم پر جتنی بھی انوسٹمنٹ کی جائے وہ کم ہے تعلیم کے شعبہ پر جو ملک زیادہ توجہ دیگا وہی ملک ترقی کریگا انہوں نے کہا کہ تعلیم سے آراستہ بچے معا شرے کے بہترین شہر ی ہوتے ہیں یہی بچے معاشرے میں مسکراہٹیں بکھیرتے ہیں خوشحال معا شر ہ قوموں کی تر قی کی ضمانت ہوتا ہے تقریب سے خطا ب کرتے ہوئے چیف کوارڈینیٹر ایف آر ڈی عظمت خا ن نے کہا کہ افغان کمشنریٹ راہا پروگرام کے تحت پچپن منصو بے مکمل ہو چکے ہیں اور جن علاقو ں میں پاکستانی بچو ں کے ساتھ افغان بچے گورنمنٹ سکولوں میں تعلیم حاصل کر رہے ہیں راہا پروگرا م کے تحت ان سکولوں کی حالت بہتر بنائی جا رہی ہے یو این ایچ سی آر کے تعاون سے مزید منصو بو ں پر بھی جلد کام شروع کیا جائیگا تقر یب سے پرائمری سکول نیو کوٹلہ سیدان کے پرنسپل محمد سلیم نے بھی خطا ب کیا