حیدرآباد : واسا ملازمین کا 7 ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائيگی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ


 پير ۲۰ مارچ ۲۰۱۷    ایک ماہ پہلے     ۲۸     حيدرآباد   پرنٹ نکالیں
واسا ملازمین کا 7 ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائيگی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ، فوٹو جان علی

رپورٹ    علی حمزہ   :حیدرآباد : واسا ملازمین نے 7 ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائيگی اور ایچ ڈی اے میں مستقل ڈائریکٹر جنرل کی تعیناتی کے لئے حیدرآباد میں احتجاجی مظاہرہ کیا، احتجاج میں شریک ایک واسا ملازم نے خود پر پیٹرول چھڑک کر خودسوزی کی کوشش بھی کی۔ حیدرآباد میں ڈی جی ایچ ڈی اے کے دفتر کے سامنے کئے گئے احتجاجی مظاہرے کے شرکاء بینر اور پلے کارڈز اٹھائے تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے خلاف نعرے لگا رہے تھے، اس موقع پر ایک واسا ملازم نے خود پر پیٹرول چھڑک کر خودسوزی کی کوشش کی جسے دیگر ملازمین نے ناکام بنادیا، مظاہرین کا کہنا تھا کہ واسا ملازمین گذشتہ 7 ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہیں اور ان کے بچے فاقہ کشی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں، ورک چارج ملازمین کو مستقل کرنے کے بجائے انہیں جبری برطرف کیا جارہا ہے جو قابل مذمت ہے، انہوں نے کہا کہ کئی سال سے ایچ ڈی اے میں مستقل ڈائریکٹر جنرل تعینات نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے ادارے کے معاملات شدید متاثر ہورہے ہیں اور ملازمین تنخواہوں سے محروم ہیں، مظاہرین نے سندھ حکومت سے مطالبہ کیا کہ واسا ملازمین کو 7 ماہ کی تنخواہیں فوری طور پر ادا کی جائے اور ایچ ڈی اے میں مستقل ڈائریکٹر جنرل کی تعیناتی یقینی بنائی جائے۔