اتوار ۲۳ ۲۰۱۸ -

آسٹریلوی خاتون پیچیدہ بیماری میں مبتلہ دن میں تیس بار الٹیاں ہوتی ہیں

ویب ڈیسک | ۳ ھفتے پہلے

58

No-Image

 پرتھ: آسٹریلوی خاتون معدے اور آنتوں کی پیچیدہ بیماری کا شکار ہوگئی جس میں مریضوں کو 24 گھنٹوں میں 30 بار الٹیاں ہوتی ہیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق آسٹریلیا کے شہر پرتھ کی رہائشی 19 سالہ کیئٹلن وائٹ ایک پیچیدہ بیماری میں مبتلا ہیں جس کی وجہ سے ان کا نظام ہاضمہ مکمل طور پر خراب ہو چکا ہے۔

معدے اور آنتوں کی یہ بیماری gastroparesis دنیا بھر میں چند ہی لوگوں کو ہوتی ہے۔اس بیماری میں معدے کے اعصاب جواب دے جاتے ہیں اور وہ اینزائم جو معدے سے خارج ہوتے ہیں اورغذا کو ہضم کرنے میں کلیدی کردار ادا کرتے ہیں، ناقص ہو جاتے ہیں جس سے معدہ بھی اپنی کارکردگی نہیں دکھا پاتا۔ جیسے ہی مریض کا معدہ خالی ہوتا ہے فوری طور پر الٹی ہوجاتی ہے جس سے جسم پانی اور نمکیات کی کمی کا شکار ہو جاتا ہے۔ یہ عمل کیئٹلن وائٹ کو 24 گھنٹوں میں 30 بار جھیلنا پڑتا ہے۔

میڈیکل سائنس اس بیماری کی تشخیص تو کر پائی ہے لیکن تاحال اس کا علاج ڈھونڈنے میں ناکام نظر آتی ہے۔ ماہرین طب کیئٹلن وائٹ کا علاج ’روایتی‘ طور پر الٹی روکنے والی ادویات، توانائی بخش ڈرپس اور درد کش ادویات سے کر رہے ہیں جس کے لیے مریضہ کو دن میں کئی بار اسپتال میں داخل ہونا پڑتا ہے جہاں کسی خطرناک انفیکشن کا شکار ہونے کے امکانات بھی ہوتے ہیں۔ 

Web Portal Developed and Designed by MIT SOFTWARE SOLUTION Hyderabad : http://mitsoftsolution.net, Contact us : (022) 3411371