news-details

چیف جسٹس کیخلاف نازیبا زبان کا استعمال، پیپلز پارٹی کے 15 رہنما ایف آئی اے میں طلب

اسلام آباد:(بدھ: 04 اگست 2021) ایف آئی اے نے چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد کے خلاف نازیبا زبان کے استعمال سے متعلق تحقیقات میں پیپلز پارٹی کے 15 رہنماؤں کو طلبی کا نوٹس جاری کردیا ہے۔ تفصیلات مطابق چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد کے خلاف نازیبا زبان کے استعمال سے متعلق تحقیقات جاری ہیں ، ایف آئی اے نے پیپلز پارٹی کے8 ارکان اسمبلی سمیت 15 رہنماؤں کو طلبی کا نوٹس جاری کردیا ہے۔


حکام کا کہنا ہے کہ وزیر اطلاعات سندھ ناصر حسین شاہ ، وزیرتعلیم سندھ سعید غنی ، شہلا رضا، ناز بلوچ، نفیسہ شاہ، شاہدہ رحمانی اور قادر خان مندوخیل اور قادر پٹیل کو ایف آئی اے سائبر کرائم سرکل طلب کیا گیا ہے۔ ایف آئی اے حکام نے بتایا کہ تمام رہنماؤں کو 12 اور 13 اگست کو طلب کیا گیا ہے، ملزم کے موبائل فون سے رہنماؤں کے رابطے کا ریکارڈ ملا ہے جبکہ پی پی رہنماؤں کے علاوہ دیگر 7 مزید عہدیداروں کو بھی طلب کیا گیا ہے۔


یادرہے رواں سال جون میں چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس گلزار احمد کے خلاف غیر مہذب زبان استعمال کرنے پر سیاسی رہنما کو شوکاز نوٹس جاری کیا گیا تھا۔ جس پر عدالت عظمیٰ نے کراچی سے تعلق رکھنے والے پی پی رہنما سے چیف جسٹس پر عائد الزامات سے متعلق مفصل جواب طلب کرلیا اور پیمرا اور ایف آئی اے کو بھی نوٹس جاری کرتے ہوئے انہیں توہین آمیز مواد پر مبنی ویڈیو سےمتعلق ریکارڈ پیش کرنےکا حکم دیا تھا۔