news

کورونا صورتحال میں بہتری، ملک کے 18اضلاع میں پابندیوں میں نرمی کا اعلان

اسلام آباد:(منگل: 14 ستمبر2021)   نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے سربراہ اسد عمر نے کورونا صورتحال میں بہتری پر ملک کے 18اضلاع میں پابندیوں میں نرمی کا اعلان کرتے ہوئے ویکسین نہ لگوانے والوں پر 30 ستمبر سےنئی پابندیاں عائد کردی۔ تفصیلات کے مطابق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے سربراہ اسد عمر نے میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہ کورونا کی چوتھی لہر میں اسپتالوں میں مریضوں میں اضافہ ہوا، ہم نے 24اضلاع کے مزید بندشیں لگائی تھیں، ان 24 اضلاع میں وبا کی شرح زیادہ اوراسپتالوں پر دباؤ تھا، اب 24 میں سے 18اضلاع میں بہتری نظرآرہی ہیں۔


اسد عمر نے کورونا پابندیوں میں نرمی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ 24 میں سے اب صرف 6اضلاع میں وبا کے پیش نظر بندشیں برقراررہیں گی، 6اضلاع میں لاہور،فیصل آباد، ملتان، سرگودھا،گجرات ، بنوں شامل ہیں، ان 6اضلاع میں اونچی سطح پر بندشیں 22ستمبر تک برقراررہیں گی۔ این سی او سی کے سربراہ کا کہنا تھا کہ 18اضلاع میں 50 فیصد ٹرانسپورٹ اور اسکولز کھولنے سمیت آؤٹ ڈورریسٹورنٹس میں12بجے تک اجازت ہوگی تاہم انڈورڈائننگ بند رہے گی۔


انھوں نے واضح کیا کہ جوشخص 30ستمبر تک مکمل ویکسینیٹڈ نہ ہووہ 5بڑی چیزیں نہیں کرسکےگا ، مکمل ویکسینیشن نہ ہونے پر تعلیمی اداروں سے منسلک لوگوں پرکام کی پابندی ہوگی ، ہوائی سفرکی اجازت نہیں ہوگی، شاپنگ سینٹرز میں داخلہ ، ہوٹلز، گیسٹ ہاؤس میں بکنگ پر پابندی ہوگی جبکہ ریسٹورنٹس ، شادی تقریبات میں جانے پر پابندی ہوگی۔ اسد عمر کا کہنا تھا کہ ہماری کوشش ہے اسپتالوں میں آکسیجن میں فراہمی میں کمی نہ آئے ، ملک کے باقی حصوں میں جو پابندیاں ہیں انھیں30ستمبر تک توسیع دی ہے، ملک میں وبا میں کمی آرہی ہے،چوتھی لہر نیچے آرہی ہے، آئندہ 15دنوں میں وبامیں مزید کمی کی توقع ہے۔


ویکسین لگانے کے عمل کے حوالے سے وفاقی وزیر نے کہا کہ ملک بھر میں کوروناکی ویکسین لگانے کا عمل بھی جاری ہے، بڑے شہروں میں تقریباً40فیصد آبادی کی مکمل ویکسینیشن کاہدف پوراکرناہے، جب بھی کورونا کی لہر آتی ہے تو اسپتالوں پر دباؤ نظرآتاہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کاروبار کی بندشوں کی طرف نہیں جائیں گے، جو شخص ویکسین نہیں لگائے گا اس پر بندش کی طرف جائیں گے، ویکسین نہ لگانےوالوں کیلئے بندشیں آہستہ آہستہ بڑھاتےجائیں گے۔