news-details
اسلام آباد

ووٹوں کی خرید و فروخت: الزامات ثابت ہونے پر این اے 133 کا ضمنی انتخاب ملتوی ہو سکتا ہے: الیکشن کمیشن

لاہور:(پیر 29 نومبر 2021ع) الیکشن کمیشن کے مطابق الزامات ثابت ہونے پر این اے 133 کا ضمنی انتخاب ملتوی بھی ہو سکتا ہے، اگر معاملہ زیر التوا رہا اور الیکشن کے بعد ثابت ہوا تو امیدوار کو نااہل قرار دیا جا جاسکتا ہے۔
این اے 133 کے ضمنی انتخاب میں ووٹ خریدنے کی مبینہ ویڈیو کی رپورٹ کل جمع کروائی جائے گی۔ ترجمان الیکشن کمیشن کے مطابق متعلقہ محکموں کی رپورٹس میں ووٹوں کی خرید و فروخت ثابت ہوئی تو کاروائی ہوگی، خرید و فروخت ثابت ہونے پر معاملہ الیکشن کمشن اسلام آباد کو بھیجا جائے گا۔
ترجمان الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ چیئرمین پیمرا، چیئرمین نادرا، آئی جی پولیس اور کمشنر لاہور کو خط لکھ دیا گیا جس میں ویڈیو کی فرانزک اور افراد کی نشاندہی کا حکم دیا گیا ہے، ریٹرننگ افسر نے 30 نومبر تک فرانزک اور کارروائی کی تحریری رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کی ہے، امیدوار شائستہ پرویز ملک سے بھی کارکنان پر ووٹ خریداری پر فوری جواب طلب کیا گیا ہے۔
دوسری جانب الیکشن کمیشن کے مطابق سینیٹر محمد ایوب کے استعفیٰ کے بعد خالی نشست پر الیکشن رواں سال 20 دسمبر کو ہوگا۔ پولنگ خیبرپختونخوا اسمبلی کی عمارت میں ہوگی۔ ریٹرننگ آفیسر آج پبلک نوٹس جاری کرے گا۔ کاغذات نامزدگی 30 نومبر سے 2 دسمبرتک جمع کئے جاسکیں گے، 3 دسمبر کو کاغذات جمع کرنیوالے امیدواروں کی فہرست جاری ہوگی۔
الیکشن کمیشن کے مطابق 6 دسمبرتک کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال مکمل کی جائے گی، اپیلیں 8 دسمبر تک داخل کرائی جاسکتی ہیں، ٹرائیبونل اپیلوں پر فیصلہ 10 دسمبر تک کرے گا، 11 دسمبرکو امیدواروں کی نظرثانی شدہ فہرست جاری ہوگی، امیدوار کاغذات 13 دسمبر تک واپس لے سکیں گے۔