news-details
اسلام آباد

آپ نے ہمارے خلاف جو کرنا ہے آج کرو کل موقع نہیں ملے گا، وزیراعظم کی آصف زرداری کو بندوق کی دھمکی برداشت نہیں: بلاول بھٹو

اسلام آباد:(جمعرات 10 مارچ 2022ع) بلاول بھٹو نے حساس اداروں سے آصفہ سے ڈرون کیمرہ ٹکرانے کی تحقیقات کا مطالبہ کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ ڈرون کا آصفہ بھٹو کی طرف بڑھنا میرے اور میرے والد کیلئے پیغام تھا، کل وزیراعظم نے بندوق کی دھمکی دی جو برداشت نہیں کریں گے۔ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پیپلزپارٹی کا عوامی مارچ عدم اعتماد کیلئے تھا، پاکستان کے عوام نے سلیکٹڈ وزیراعظم کو مسترد کر دیا، حکومت ہر معاملے میں ناکام ہوچکی، پارلیمان پر بڑی ذمہ داری ہے کہ عوامی امیدوں پر پورا اترے، پارلیمان میں بیٹھے لوگوں کو عوامی مطالبے کو ماننا پڑے گا، 2018 میں اس پارلیمان سے جو غلطی ہوئی اسے درست کیا جائے گا۔
بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ حساس ادارے آصفہ بھٹو پر ہوئے حملے کی تحقیقات کریں، یہ سمجھتے ہیں ہم بچے ہیں، ہم اب بچے نہیں رہے، جو میں آپ کیساتھ کروں گا آپ کی نسلیں نہیں بھولیں گی، ہم نے کبھی بندوق استعمال نہیں کی مگر استعمال کرنا جانتے ہیں، ہمارے ساتھ سیاست کریں، سیاست کرنا ہمارا اور آپ کا حق ہے، جو سمجھتے ہیں ہم ڈر جائیں گے، جان لیں ہمارے اندر شہیدوں کا خون ہے، اب گالی دینے سے وزیراعظم کی کرسی نہیں بچے گی، یہ جتنا بوکھلاہٹ کا شکار ہوں گے اتنی گالیاں دیں گے۔
چیئرمین پیپلزپارٹی نے مزید کہا کہ آپ نے اپنی ماں کے نام پر کینسر اسپتال بنا کر پیسہ کھایا، علیمہ باجی نے سلائی مشین بیچ بیچ کر اتنا پیسہ کمایا، قائد عوام نے اکرام اللہ نیازی کو کرپشن پر ہٹایا جو یہ آج تک نہیں بھولے، جو کیسز آپ پر بننے والے ہیں عمران خان کو اندازہ ہی نہیں، آپ نے ہمارے خلاف جو کرنا ہے آج کرو کل موقع نہیں ملے گا، وزیراعظم کے کل کے بیان پر قانونی طریقہ کار اپنایا جائےگا، اینٹ کا جواب اینٹ سے دوں گا، شہباز شریف سے وقت پر درخواست کریں گے کوئی اچھا وزیر داخلہ رکھیں، فضل الرحمان کو گالی دینے والے تم ہوتے کون ہو؟۔