news-details
اسلام آباد

پارلیمنٹ لاجز سے گرفتار جے یو آئی ف کے ایم این ایز اور کارکن رہا، کراچی، اسلام آباد اور پشاور سمیت دیگر شہروں میں دھرنے ختم

اسلام آباد: (جمعہ 11 مارچ 2022ع) پارلیمنٹ لاجز سے گرفتار جے یو آئی ف کے ایم این ایز اور کارکنوں کو رہا کر دیا گیا۔ لاہور، کراچی، اسلام آباد اور پشاور سمیت دیگر شہروں میں دھرنے ختم کر دیئے گئے۔ خیال رہے اسلام آباد پارلیمنٹ لاجز میں جے یو آئی کی ذیلی تنظیم انصار الاسلام کے رضاکاروں کی موجودگی پر پولیس نے آپریشن کیا۔ چوتھے فلور پر ایم این اے صلاح الدین ایوبی کے کمرے کا گھیراؤ کیا گیا جبکہ پارلیمنٹ لاجز میدان جنگ بنا رہا۔
پولیس نے دروازہ توڑ کر متعدد رضاکاروں کو گرفتار کیا۔ جے یو آئی کے دو ارکان قومی اسمبلی صلاح الدین اور جمال الدین کو بھی حراست میں لیا گیا۔ پولیس آپریشن 30 منٹ تک جاری رہا، مزید نفری بھی طلب کی گئی۔ انصار الاسلام کے متعدد رضاکار کپڑے تبدیل کر کے لاجز سے نکل گئے۔ لیگی رہنما ایاز صادق، خواجہ آصف، سعد رفیق، رانا ثنااللہ بھی اظہار یکجہتی کے لئے پہنچے، دھکم پیل کے دوارن دروازہ لگنے سے سعد رفیق کے پاؤں پر چوٹ آئی۔ ایم این اے صلاح الدین ایوبی نے کارکنوں کی گرفتاریوں پر مزاحمت بھی کی۔
اطلاع ملنے پر مولانا فضل الرحمان، اکرم درانی اور جے یو آئی کے دیگر رہنما بھی پہنچے، سربراہ جے یو آئی کا کہنا تھا کہ ان کے ارکان کو یرغمال بنانے کی اطلاع پر آنے والے رضا کار غیر مسلح تھے۔ خواجہ آصف کا کہنا تھا پارلیمانی تاریخ میں ایسا کبھی نہیں ہوا۔ آئی جی اسلام آباد نے ڈی چوک پر ناکہ انچارج، پارلیمنٹ لاجز کے انسپکٹر انچارج اور لائن آفیسر کو معطل کر دیا۔