news-details
لوئر دیر

جنرل باجوہ نے کہا فضل الرحمان کو ڈیزل نہ کہیں، میں انہیں ڈیزل نہیں کہتا لیکن عوام کہہ رہی ہے: وزیراعظم

لوئر دیر:(جمعہ 11 مارچ 2022ع) وزیراعظم نے کہا ہے کہ ابھی جنرل باجوہ سے بات ہو رہی تھی، جنرل باجوہ نے کہا فضل الرحمان کو ڈیزل نہ کہیں، آرمی چیف سے کہا عوام نے ان کا نام ڈیزل رکھا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے لوئر دیر میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کے شعور، جنون کو سلام پیش کرتا ہوں، شاندار استقبال کا دل سے شکریہ ادا کرتا ہوں، جھکنے والے شخص کی کوئی عزت نہیں کرتا، طاقتور کو قانون کے تابع کرنا میرے منشور کا حصہ ہے، 3 افراد نے ملک کو مقروض بنایا، نواز شریف، زرداری نے ڈرون حملوں کی مذمت نہیں کی، نواز شریف، زرداری نے ڈرون حملوں کی مذمت نہیں کی، ڈرون حملوں کی مذمت تحریک انصاف کر رہی تھی، دنیا صرف خوددار ملک کی عزت کرتی ہے، 25 سال پہلے سیاست شروع کی تھی۔
وزیراعظم عمران خان کے جلسے کے دوران عوام نے ڈیزل ڈیزل کے نعرے لگائے جس پر عمران خان نے کہا کہ میری آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے بات ہوئی ہے، انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کو ڈیزل نہیں کہیں، میں نے انہیں کہا کہ یہ نام میں نے نہیں عوام نے رکھا ہے، میں اب انہیں ڈیزل نہیں کہہ رہا لیکن عوام کہہ رہی ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کلمہ طیبہ انسان کو غیرت دیتا ہے، جب وہ خدا کے سوا کسی کے سامنے نہیں جھکتا تو اسے عزت ملتی ہے، میں نہ کسی کے سامنے جھکا ہوں اور نہ آئندہ جھکوں گا۔
عمران خان نے کہا کہ نواز شریف نے نریندر مودی کے خلاف ایک بار بھی بات نہیں کی، بلکہ اس نے اپنے دفتر خارجہ کے ترجمان کو کہا کہ ہندوستان کے خلاف کوئی بیان جاری نہ کیا جائے وجہ یہ ہے کہ نواز شریف کا پیسہ ہندوستان میں بھی پڑا ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ڈیزل نے ابھی پریس کانفرنس میں کہا کہ جب ہم اقتدار میں آئیں گے تو ادارے کو ٹھیک کریں گے یعنی ہم فوج کو ٹھیک کریں گے، پاکستان اگر آج بچا ہوا ہے کہ تو اس کی وجہ صرف یہ ہے کہ ہمارے پاس ایک مضبوط فوج ہے، عراق، شام، لیبیا، صومالیہ اور افغانستان دیکھ لیں اور پاکستان دیکھ لیں، مسلمان دنیا میں سب سے زیادہ طاقت ور فوج ہماری ہے اور اس فوج کے پیچھے کون پڑا ہے؟