news-details

مسجد نبوی ﷺ میں توہین آمیز نعرے بازی کا معاملہ، راشد شفیق کا مزید 2 دن کا جسمانی ریمانڈ

لاہور:(پير 02 مئي 2022ع) مسجد نبوی ﷺ میں توہین آمیز نعرہ بازی کے معاملے پر عدالت نے راشد شفیق کا دو دن کا مزید جسمانی ریمانڈ دے دیا۔ آج صبح پولیس نے اٹک کچہری کے تمام رستوں کو بند کر دیا، راشد شفیق کے عدالت میں پیشی کے موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے۔ پولیس نے ضلع کچہری کو مکمل طور پرگھیرے میں لیے رکھا، کچہری کے مین گیٹ پر بھی پولیس کے مسلح دستے تعینات کیے گئے تھے، کچہری کے اندر کسی بھی شخص کو جانے کی اجازت نہیں تھی۔
وکلاء کو بھی کچہری کے اندر جانے میں شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑا، بعض پولیس اہلکاروں نے وکلاء سے بدتمیزی بھی کی۔ میڈیا کے نمائندوں کی کچہری کے اندر داخلے پر پابندی تھی۔ سابق مشیر زلفی بخاری اور اس کے چچا زاد بھائی سابق صوبائی وزیر کو بھی بڑی مشکل سے اندر جانے دیا گیا۔
راشد شفیق کو سینئر سول جج منیر عالم کی عدالت میں پیش کیا گیا، عدالت نے راشد شفیق کا دو روز کا مزید جسمانی ریمانڈ دے دیا، ان کو پولیس ڈی سی کے دفتر کے راستے سے باہر لے کر گئی۔