news-details

اسلام آباد ہائیکورٹ نے پی ٹی آئی کو دھرنے کی اجازت نہ ملنے پر اسلام آباد انتظامیہ کو نوٹس جاری کر دیا

اسلام آباد: (بدھ: 02 نومبر2022ء) تحریک انصاف کو اسلام آباد میں دھرنے اور جلسے کی اجازت نہ ملنے پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے انتظامیہ کو نوٹس جاری کر دیا۔ وفاقی دارالحکومت میں جلسہ اور دھرنا کرنے کی اجازت نہ ملنے کے خلاف تحریک انصاف کی جانب سے دی گئی درخواست کی سماعت اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے کی جس میں عدالت نے انتظامیہ کو کل کے لئے نوٹس جاری کرتے ہوئے مجاز افسر کو عدالت طلب کر لیا۔
پی ٹی آئی کے وکیل نے عدالت میں مؤقف اختیار کیا کہ تحریک انصاف نے حقیقی آزادی مارچ کے لئے این او سی کی درخواست دی ہے جب کہ اسلام آباد انتظامیہ اس معاملے کو لٹکا رہی ہے، اجازت کی درخواست 6 اور 7 نومبر کے لئے کی گئی ہے، درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے تناظر میں کشمیر ہائی وے پشاور موڑ پر جلسے کا این او سی دینے کے لئے ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کو احکامات جاری کئے جائیں۔
درخواست میں کہا گیا ہے کہ عدالت تحریک انصاف کے کارکنوں کو ہراساں کرنے سے روکنے اور آئی جی اسلام آباد کو تحریک انصاف کے جلسے، دھرنے کے لئے سکیورٹی فراہم کرنے کا حکم دے،عدالت نے نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت کل تک کے لیے ملتوی کردی۔