news-details

چینی صدر کا سیلاب زدگان کیلئے 50 کروڑ یوآن کے اضافی امدادی پیکج کا اعلان، اسٹریٹجک پارٹنرشپ مزید مضبوط کرنے پر اتفاق

بیجنگ: (بدھ: 02 نومبر2022ء) وزیرِ اعظم شہباز شریف دو روزہ دورے پر چین میں ہیں جہاں ان کی چین کے صدر شی جن پنگ سے ملاقات ہوئی۔ دونوں رہنماؤں کے مابین ہونے والی ملاقات میں چین اور پاکستان کے درمیان باہمی، خصوصاً اقتصادی شعبوں میں تعاون پر بات چیت ہوئی، جب کہ سی پیک سمیت کثیرجہتی تعاون بڑھانے اور اسٹریٹجک پارٹنرشپ مزید مضبوط کرنے پر اتفاق ہوا.
وزیراعظم شہباز شریف کی چین کے صدرشی جن پنگ کے ساتھ ملاقات کا اعلامیہ بھی جاری کردیا گیا ہے، جس کے مطابق چین نے پاکستان میں سیلاب زدگان کیلئے 50 کروڑ یوآن کے اضافی امدادی پیکج کا اعلان کیا ہے۔ اور چینی صدر نے کہا ہے کہ پائیدار اقتصادی ترقی کیلئے پاکستان کی حمایت جاری رکھیں گے۔
شہباز شریف اور شی جن پنگ میں کشمیر و افغانستان کی صورتحال پر بھی بات چیت ہوئی، اور اتفاق ہوا کہ پرامن اور مستحکم افغانستان علاقائی سلامتی و اقتصادی ترقی کو فروغ دے گا۔ دونوں رہنماؤں کے مابین اتفاق ہوا کہ سی پیک کی افغانستان تک توسیع سے علاقائی رابطوں کو تقویت ملے گی۔ چینی صدر نے پاکستان کا جلد دورہ کرنے کی وزیراعظم کی دعوت قبول کرلی۔
وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد وزیراعظم شہباز شریف کا چین کا یہ پہلا دورہ ہے جبکہ شہباز شریف چینی صدر کے انتخاب کے بعد چین کا دورہ کرنے والے پہلے رہنما ہیں۔ وزیراعظم شہباز شریف چینی ہم منصب لی کی چیانگ کی دعوت پر یہ دورہ کر رہے ہیں، اور ان کا یہ دورہ دونوں ممالک کے درمیان قیادت کی سطح پر مسلسل رابطوں کی کڑی ہے۔
وزیراعظم کے دورے سے دونوں ممالک کے درمیان وسیع تر دوطرفہ تعاون کے ایجنڈے پر پیشرفت متوقع ہے۔ دورے کے دوران مفاہمت کی متعدد یادداشتوں اور معاہدات پر دستخط ہونے کا بھی امکان ہے۔ وزیراعظم کے دورہ سے چین پاکستان اقتصادی راہداری کے منصوبوں کی رفتار مزید بڑھنے کی توقع ہے