news-details

عمران خان حملے کی تحقیقات کیلئے سپریم کورٹ میں آئینی درخواست دائر

اسلام آباد: (پير: 14 نومبر2022ء) پاکستان تحریک انصاف نے عمران خان پر حملے سمیت دیگر معاملات کی تحقیقات کے لئے سپریم کورٹ میں درخواستیں دائر کردیں۔ تحریک انصاف کے ارکان اسمبلی اور سینیٹرز نے سپریم کورٹ اور ملک کی مختلف رجسٹریوں میں درخواستیں دائر کی ہیں۔
درخواست میں سپریم کورٹ سے عمران خان پر حملے، اعظم سواتی کی مبینہ ویڈیو اور ارشد شریف قتل کی عدالتی تحقیقات کی استدعا کی گئی ہے۔ سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے اعظم سواتی نے کہا کہ اراکین پارلیمنٹ عدالت کے دروازے پر کھڑے ہیں، پارٹی کے تمام ایم این ایز اور سینیٹرز ہمارے ساتھ ہیں۔
اعظم سواتی نے کہا کہ چیف جسٹس نے کہا تھا مارشل لاء کیلئےعدالتوں سے گزرناہوگا،ملک میں مارشل لا یا ایمرجنسی لگنے کی افواہیں ہیں۔ رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ سابق وزیراعظم پر حملہ ہوا، 3 لوگوں کو اس کا ذمہ دار ٹھہرایا،ایک سینیٹر کو گھر سے اٹھا کر سیکیورٹی اہلکاروں نے ظلم کیا، میری نازیطبا ویڈیو جاری کی گئی، چیرمین سینیٹ غیرت دکھا کر استعفی دیں کیونکہ میں ان کا مہمان تھا۔
سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں درخواست جمع کرانے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان میں بہت سے واقعات ہوئے، جن کےحقائق پاکستانی قوم جاننا چاہتی ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں 3 باتوں پر جوڈیشل کمیشن ضرور بنانا چاہیے،عمران خان پر حملہ ہوا بعد میں ہماری درخواست پر مقدمہ درج نہیں ہوا۔
وائس چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ اعظم سواتی اور ان کی اہلیہ کے معاملے پر تحقیقات کی جائیں، درخواست میں ارشد شریف قتل کی شفاف تحقیقات کرنے کی استدعا کی ہے۔