news-details

آرمی چیف کی تقرری:وزیراعظم شہباز شریف نے اتحادی جماعتوں کا اجلاس آج بلالیا

اسلام آباد: (بدھ : 23 نومبر2022) وزیراعظم میاں شہباز شریف نے اتحادی جماعتوں کے پارلیمانی لیڈرز کا اجلاس طلب بلالیا ۔ ذرائع کے مطابق اتحادی جماعتوں کے پارلیمانی لیڈرز کا اجلاس آج شام 6 بجے وزیر اعظم ہاؤس میں ہوگا جس میں ملک کی مجموعی سیاسی صورت حال پر مشاورت ہوگی.
اہم اجلاس میں آرمی چیف کی تقرری پر مشاورت ہوگی، وزیراعظم پارلیمانی رہنماوں کو اہم تقرریوں سے متعلق فیصلوں پر اعتماد میں لیں گے۔ اجلاس آج شام ساڑھے 6 بجے ہوگا۔
وزیراعظم اتحادیوں کو اہم فیصلوں سے متعلق اعتماد میں لیں گے، جب کہ آج ہونے والی اہم اجلاس میں پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی ) کے لانگ مارچ سمیت اہم سیاسی امور پر بھی مشاورت ہوگی۔ اجلاس میں میں ملک کی مجموعی سیاسی صورت حال پر بھی گفتگو ہوگی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم شرکاء کو عشائیہ بھی دیں گے اور پارلیمانی رہنماوں کو اہم تقرریوں سے متعلق فیصلوں پر اعتماد میں لیں گے۔
یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ 29 نومبر کو آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف عہدے سے سبکدوش ہو رہے ہیں، ان کی تقرری موضوع بحث بن چکی ہے۔ اگر سینیارٹی کا جائزہ لیا جائے تو اس وقت چھ لیفٹیننٹ جنرلز نئے سپہ سالار کیلئے امیدوار ہیں۔ ان امیدواروں میں لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر، لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرزا، لیفٹیننٹ جنرل اظہر عباس، لیفٹیننٹ جنرل نعمان محمود، لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید شامل ہیں۔ لیفٹیننٹ جنرل محمد عامر کا نام بھی اس میں شامل ہیں۔ موجود آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی ریٹائرمنٹ پر 29 نومبر کو چین آف کمانڈ کی تبدیلی کی تقریب ہوگی جہاں روایتی طور پر سابق آرمی چیف اپنی چھڑی نئے آرمی چیف کو پیش کریں گے۔
وزیراطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ وزیراعظم شہباز شریف متعین طریقہ کارکے مطابق تعیناتیوں کا فیصلہ کریں گے۔ مریم اورنگزیب نے اپنے بیان میں کہا کہ وزارت دفاع کی جانب سے بھجوائی گئی سمری وزیراعظم آفس کو موصول ہوگئی ہے، سمری میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی اور چیف آف آرمی اسٹاف کے عہدوں پر تقرری کے لئے ناموں کا پینل بھجوایا گیا ہے۔ وفاقی وزیر اطلاعات کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم شہبازشریف متعین طریقہ کار کے مطابق ان تعیناتیوں سے متعلق فیصلہ کریں گے۔