ایف سی بلوچستان کا قلعہ عبداللہ میں دیگر اداروں کے ساتھ مشترکہ آپریشن،کروڑوں مالیت کی منشیات برآمد

news-details

کوئٹہ: (اتوار:10ستمبر2023ء) ایف سی بلوچستان نے انسداد منشیات کے حوالے سے قلعہ عبداللہ میں دیگر اداروں کے ساتھ مشترکہ آپریشن کرتے ہوئے کروڑوں مالیت کی منشیات اور اس کی تیاری میں استعمال کیمیائی مواد ضبط کر لیا ہے۔ پاک فوج، قانون نافذ کرنے والے اداروں کے تعاون سے ملکی سطح پر سمگلروں کے خلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن جاری ہے، آپریشن میں ایف سی بلوچستان (نارتھ)، اینٹی نارکوٹکس فورس، لیویز، قانون نافذ کرنے والے ادارے اور دیگر نے حصہ لیا۔

مذکورہ آپریشن 2016 کے بعد انسداد منشیات کی سب سے بڑی کارروائی ہے، اس دوران 1100 کلو چرس، 94 کلوگرام ایفیڈرین، 16.2 کلو گرام آئس اور 1090 لیٹر ایچ سی ایل بھی برآمد کر لئے گئے، اس برآمد شدہ منشیات کی کل مالیت 72187950 روپے ہے۔ آپریشن میں منشیات کے خفیہ گودام اور منشیات افزائش کی کئی ایکڑ فصلیں بھی برآمد کی گئی ہیں، 6 ٹن ایفیڈرین کی تلفی، 48 منشیات کے کمپاؤنڈز کو مسمار کر دیا گیا۔

دوسری جانب 70 ایکڑز منشیات کی فصلیں تلف کر دی گئی اور منشیات پروسیسنگ کی 28 مشینیں تباہ کر دی گئی ہے، بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن میں ٹوٹل 11 افراد کو زیر حراست میں لیا گیا ہے۔ مقامی لوگوں نے قلعہ عبداللہ اور گلستان میں منشیات فروشوں کے خلاف اس کارروائی کا خیر مقدم کیا گیا اور سکیورٹی اداروں کا شکریہ ادا کیا ہے۔

واضح رہے کہ اِس تاریخی آپریشن کو کامیابی سے مکمل کرنے کیلئے پہلے جرگے کا انعقاد کیا گیا اور متعلقہ لوگوں کو وارننگ دی گئی تھی۔ آپریشن کے دوران منشیات کی پیداوار، منشیات ذخیرہ کرنے والی جگہوں اور قیمتی مشینوں کو تلف کیا گیا، اب تک کل 42 اہداف کے خلاف کارروائی کی جاچکی ہے، کارروائی میں منشیات کے تمام ٹھکانوں کو تباہ کیا گیا ہے۔