امریکا کیخلاف شکست نے اوور سیز پاکستانیوں اور ہمارے سر شرم سے جھکا دیئے ہیں،بھارت کیخلاف میچ کیلئے نیک تمنائیں ہیں:احمد شہزاد

news-details

لاہور: (ہفتہ: 08 جون 2024ء) قومی ٹیم کے اوپنر احمد شہزاد کپتان بابراعظم سمیت پوری ٹیم پر برس پڑے۔ مقامی ٹی وی چینل پر گفتگو کرتے ہوئے اوپنر احمد شہزاد نے کہا کہ جو باتیں کررہا ہوں اس کے بعد ٹیم میں واپسی کا کوئی امکان نہیں لیکن میرٹ کی دھجیاں اڑائی جارہی ہیں۔ امریکا کیخلاف شکست نے اوور سیز پاکستانیوں اور ہمارے سر شرم سے جھکا دیئے ہیں، انہوں نے سوال کیا کہ مجھے بتائیں بابراعظم کی کپتانی کو 4 سے 5 سال ہوگئے ہیں کوئی ایونٹ جتواسکے ہیں؟ البتہ یہ ضرور ہوا کہ افغانستان، زمبابوے، نیدرلینڈز اور نیوزی لینڈ کی سی ڈی ٹیمز کیخلاف سیریز برابر کیں اور آج امریکا سے بھی ہار گئے۔

بابر کی کپتانی میں کوئی بہتری نہیں آئی طویل عرصے بعد واپسی کرنے والے عامر سے سپر اوور کروارہے ہیں، نسیم شاہ! شاہین آفریدی یا حارث رؤف سے کیوں بالنگ نہیں کروائی۔ اوپنر نے کہا کہ ہیڈکوچ گیری کرسٹن کہہ رہے ہیں کہ آخری اوور ہے حارث یارکر لیتھ پر بالنگ کروا رہا ہے، مڈآف کا فیلڈر پیچھے لاؤ تو بابر ضد پر اڑے رہے وہیں اور چوکا کھا کر میچ برابر کروادیا۔ اسی میچ انکی بیٹنگ دیکھیں ایسا لگ رہا ہے جیسے کوئی جیسن گلسپی یا شعیب اختر بالنگ کروارہا ہے کہ کھیلنا مشکل ہوگیا ہے امریکی ٹیم کیخلاف محض 14 بولز پر 4 رنز یہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانی ٹیم کا کیلیبر یہیں آگیا ہے مسلسل چھوٹی ٹیموں سے ہارنا مذاق نہیں ہے، ہماری تیم ساتویں نمبر پر ایسے ہی نہیں پہنچی، کرکٹ کو ہاکی طرح تباہ کردیا ہے۔ احمد شہزاد نے ٹیم مینجمنٹ پر الزام عائد کیا کہ وہ پرفارمنس بہتر بنانے کے بجائے شوز میں فون کررہے ہیں، امریکا کیخلاف شکست نے اوور سیز پاکستانیوں اور ہمارے سر شرم سے جھکا دیئے ہیں۔ قومی ٹیم کا امریکا سے ہارنا اَپ سیٹ نہیں ہے، بھارت کیخلاف میچ کیلئے نیک تمنائیں ہیں لیکن ایسی کرتوتوں کیسا جیتنا ممکن ہی نہیں، آج یہ لوگ کرکٹ کو اس نہج پر لے آئے ہیں کہ بھارت کیخلاف میچ سے قبل ہی پاکستانی شائقین آدھی قیمت میں ٹکٹ بیچ رہے ہیں۔