جدید ٹیکنالوجی کا استعمال صوبے میں امن وامان کی بحالی میں معاون اور مددگار ثابت ہوگا:وزیراعلیٰ سندھ

news-details

کراچی: (جمعرات: 20 جون 2024ء) وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ جدید ٹیکنالوجی کا استعمال صوبے میں امن وامان کی بحالی میں معاون اور مددگار ثابت ہوگا۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے سمارٹ سرویلنس منصوبے کا افتتاح کر دیا،  تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں  نے کہاکہ آج کی اس تقریب میں بحیثیت مہمان خصوصی شرکت میرے لیے باعث فخر ہے، امن و امان کا قیام پاکستان پیپلزپارٹی کی اولین ترجیح ہے، زیادہ سے زیادہ ٹیکنالوجی کا استعمال ہمارے قائد بلاول بھٹوزرداری کے وژن کی عکاسی کرتا ہے۔

انہوں نے کہاکہ سندھ حکومت نے S4کے لیے تقریبا 1.5 بلین روپے مختص کیے ہیں، سندھ سمارٹ سرویلینس سسٹمS4جدید اور ماڈرن ٹیکنیکس کا ایک مجموعہ ہے، سندھ کے تمام  40ٹول پلازہ پر نصب کیمرے چہرے کی شناخت اور آٹومیٹڈ نمبر پلیٹ کی جانچ کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ اس سسٹم میں کیمروں کی لائیو فیڈ ایک سینٹرل کمانڈ اینڈ کنٹرول روم میں موجودسرور کے ذریعہ جائزہ لے گی ، جو چوری شدہ گاڑیوں اور کرمنل ریکارڈ رکھنے والے افراد کا ڈیٹا فوری طور شناخت کرے گا۔

ان کاکہنا تھا کہ ٹیکنالوجی کو اپنانا اور اس کا زیادہ سے زیادہ استعمال وقت کی ضرورت ہے، آرٹیفیشل انٹیلی جنس جرائم کے نئے چیلنجزسے نمٹنے میں کلیدی کردار ادا کرے گا، اس نظام کی بدولت پولیس کی مجموعی کارکردگی بڑھے گی اور عوام کا اعتماد بحال ہوگا۔ وزیراعلیٰ سندھ نے مزید کہا کہ یہ نہ صرف کرائم کنٹرول بلکہ جرائم کی دنیا سے وابستہ افراد، گروہوں اور انکے کارندوں کو ارتکاب جرم سے قبل روکنے میں بھی مددگار اور معاون ثابت ہوگا۔

 مراد علی شاہ نے کہا کہ اس سسٹم کی ڈیزائننگ اور تنصیب میں نیشنل ریڈیو ٹرانسمیشن کارپوریشن کا کلیدی کردار ہے، میں اس نظام کی کامیابی پر پوری سندھ پولیس کو مبارکباد دیتا ہوں، امید ہےکہ اس نظام کوجرائم کےخلاف ایک مؤثرآلے کے طور پر استعمال کر کےاسے مزید مربوط اورمؤثر بنانےکی کوشش کی جائےگی۔