news-details

منی لانڈرنگ کیس: وزیراعظم شہباز شریف اور ان کے صاحبزادے وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شریف کی ضمانت میں توسیع

لاہور(آن لائین انڈس، 4 جون، 2022عہ)منی لانڈرنگ کیس میں عدالت نے وزیراعظم شہباز شریف اور ان کے صاحبزادے وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شریف کی ضمانت میں توسیع کردی۔
لاہور کی اسپیشل کورٹ سینٹرل میں وزیر اعظم شہباز شریف اور وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کی، جس سلسلے میں دونوں شہباز شریف اور حمزہ شریف عدالت میں پیش ہوئے۔
دوران سماعت وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کے وکیل امجد پرویز نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ڈیڑھ سال تک تحقیقات کی گئیں لیکن ایف آئی اے کوئی شواہد ریکارڈ پر نہ لا سکی ہے، پچھلے دور میں بدترین سیاسی انجینئرنگ کی گئی جس کو لاہور ہائیکورٹ بھی سیاسی انجینئرنگ کو حقیقت قرار دے چکی ہے۔
امجد پرویز نے مزید کہا کہ باپ بیٹا جب جیل میں تھے تو ایف آئی اے نے دونوں کو شامل تفتیش کیا، گزشتہ دور میں اپوزیشن لیڈرز کو دبانے کیلئے حکومتی مشینری کو استعمال کیا گیا۔
دورانِ سماعت جج نے استفسار کیا کہ کیا ایف آئی اے کو شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی گرفتاری مطلوب ہے؟ اس پر ایف آئی اے وکیل نے کہا کہ دونوں کی گرفتاری مطلوب ہے کیونکہ دونوں ملزمان شامل تفتیش نہیں ہوئے۔
دورانِ سماعت وزیراعظم شہباز شریف اور حمزہ شہباز عدالت کی اجازت کے بعد واپس روانہ ہوگئے، جس کے بعد عدالت نے وزیراعظم شہباز شریف اور وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز سمیت تمام ملزمان کی ضمانت میں 11 جون تک توسیع کردی گئی۔